اب خاموش رہنے کا رواج بلکل ختم ہوگیا ہے میشا شفی نے سب خاموشیاں توڑی دی

Spread the love

جنسی ہراسگی کے بارے میں آواز اٹھانے میں بہت زیادہ تاخیر کے بارے میں میشا شفی نے بتایا ’ کہ پاکستان کے لوگ اسے میری سادگی کہہ لیں، لیکن میں اس لیے نہیں بولی کیونکہ یہ میری کہانی ہے اور میں نے فیصلہ کیا ہے کہ میں نہیں بولوں گی۔ دراصل یہ ایک ایسا عمل ہوتا ہے جس میں آپ بولنے کے قابل ہی نہیں رہتے۔

میشا شفی نےکہا کہ ہمارے دماغوں میں یہ بات بچپن سے ہی بیٹھی ہوئی ہے کہ جب ہم بڑے ہو رہے ہوتے ہیں ہم کسی بھی واقعے پر بڑوں کا ڈر اور ان کا ردِعمل دیکھتے ہیں۔میشا شفی نےکہا کہ ہمارے معاشرے میں ’جھگڑا‘ ایک ایسا لفظ ہے جسے زیادہ پسند نہیں کیا جاتا۔‘

میشا کے ساتھ ایسا کیسے ہو سکتا ہے؟

علی ظفر پر الزام لگانے کے بعد سوشل میڈیا کےکچھ لوگوں کا کہنا تھا کہ میشا کے اس قسم کی چیز کیسے ہو سکتی ہے؟ میشا تو اسی ٹائم چماٹ مار دے کسی کو۔ میشا تو کبھی کسی کی کوئی ایسی کوئی چیز کبھی برداشت نہیں کریں گی۔‘

میشا شفی کا خیال ہے کہ سوشل میڈیا کے لوگ ان کو اچھی طرح سے جانتے ہیں اور ان کو میرے سے واقفیت ہے یا میرے بارے میں اتنا پتا ہے کہ وہ پیش گوئی کر سکیں کہ کسی بھی صورتحال میں، میں کیسا ، کیسا ردِعمل ظاہر کروں گی۔‘

Add a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *